صدائے مسلم
! اس بلاگ کے قیام کا مقصد دینی اور دنیاوی علوم کی نشر و اشاعت ہے ۔ ہمارا بنیادی حدف تعصب اور نفرت سے بالاتر ہو کر اعتدال پسندانہ مواد کا انتخاب ہے جس کو پڑھ کر قارئین نہ صرف علم میں اضافہ کریں بلکہ ایک متعدل اور مثبت سوچ سے بھی آراستہ ہوں ۔

آئن سٹائن کی مساوات E=mc2 کیا ہے؟

0 525

آئن سٹائن نے 1905 میں چار تحقیقی مقالے شائع کئے ، ان مقالہ جات نے جدید سائنس کو نئی بنیادیں فراہم کیں ان میں سے ایک مقالہ E=mc2 کے بارے میں بھی تھا،اس مختصر سی مساوات نے سائنسی نظریات کو ایک نئی جہت دی ، ہم یہ جانتے ہیں کہ کسی بھی نظام میں کیمیت(Mass) محفوظ رہتی ہے یعنی کیمیت ایک مستقل شے ہے ۔ مثال کے طور پر اگر ہم لکڑیوں سے آگ جلاتے ہیں تو اکسیجن کی شمولیت سے آگ جلے گی ، آگ جلنے کے اس عمل سے ہمیں تین چیزیں ملینگے ۔۔۔ نمبر1۔ کاربن ڈائی اکسٹائیڈ ، نمبر 2 ۔ پانی کے بخارات اور نمبر 3 کوئلہ ۔ لیکن دونوں صورتوں میں ہمارے پاس کیمیت مستقل رہے گی ۔ یعنی لکڑی جلنے کے قبل اور آگ جلنے کے بعد۔ ۔

مزید تفصیل کے لئے اس وڈیو کو دیکھئے

بلاگ کی تحاریر بذریعہ ای میل حاصل کریں
بلاگ کی تحاریر بذریعہ ای میل حاصل کریں
اس سہولت کو حاصل کرنے سے آپ کو تمام تحاریر ای میل پتہ پر موصول ہونگی